دوست
کریڈٹ: ٹریلاکس

ایک اچھا دوست اوپر سے ایک ناقابل یقین تحفہ ہے۔ یہ وہ بندھن ہے جو ہمیں اوپر اٹھا سکتا ہے جب ہم گر جاتے ہیں، ہماری فتوحات میں ہمارے ساتھ جشن مناتے ہیں، اور مشکل وقت میں سہارے کے لیے کندھا فراہم کرتے ہیں۔

بائبل دوستی کی شاندار کہانیوں سے بھری ہوئی ہے جو ہمیں دوسروں کے ساتھ اچھے دوست بننے کے بارے میں قیمتی سبق سکھاتی ہے۔ دریافت کیجیے۔

آپ بائبل سے دوستی کے بارے میں کیا سیکھ سکتے ہیں؟

وفاداری کا بندھن 

سب سے پہلے، داؤد اور یونتن کی کہانی ہمیں وفاداری کی قدر سکھاتی ہے، چاہے حالات کچھ بھی ہوں اپنے دوستوں کے ساتھ کھڑے ہوں ایک اچھا دوست مشکل حالات میں بھی وفاداری سے ساتھ کھڑا رہتا ہے.

بے غرضی اور حمایت

دوسری بات یہ کہ روت اور نومی ہمیں سکھاتے ہیں کہ ایک سچا دوست ہر طرح کے حالات میں ساتھ رہتاہے۔ وہ زندگی کے مشکل لمحات کے درمیان بھی مدد اور نگہداشت کی پیشکش کرتے ہیں۔

محبت، ہمدردی، اور معافی 

تیسری بات ، ہم یسوع سےسیکھتے ہیں کہ اچھے دوست ہونے کا مطلب ہے رحمدلی اور سمجھ بوجھ کاعملی مظاہرہ کرنا۔ ہمیں معاف کرنے میں جلدی اور عدالت کرنے میں سست ہونا چاہیے، جیسا کہ یسوع اپنے شاگردوں کے ساتھ برتاؤ کرتےتھے۔

دوستی کا ہاتھ سب تک بڑھا دیا گیا

چوتھی بات یہ ہے کہ ایک اچھا دوست ہونا صرف ہمارے حلقہ احباب کے اندرونی دائرے تک محدودنہیں ہوتا ۔ یہ ہمارے آس پاس کے ہر فرد تک پھیلا ہوا ہے۔ ہم ان لوگوں کے لیے امید اور محبت کی کرن بن سکتے ہیں جن سے ہم پہلے کبھی نہیں ملے۔

سرپرستی اوربڑھوتری

آخر میں، پولوس اور تیمتھیس کی دوستی سے، ہم دوسروں کی زندگیوں میں رہنمائی اور قدروقیمت کی اہمیت سیکھتے ہیں۔ ایک اچھا دوست نہ صرف وہ ہوتا ہے جو ہماری پرواہ کرتا ہے بلکہ وہ بھی جو ہمیں بڑھنے اور خود کے بہتر انسان بننے میں مدد کرتا ہے۔

آخری الفاظ

ایک اچھے دوست ہونے کا مطلب ہے وہاں ہونا، مدد کرنا، مہربانی کرنا، اور دوسروں کی زندگیوں کے لیے نور بننا۔

بی ٹی پوڈکاسٹ سُنیے 

Samuel Thambusamy is a PhD candidate with the Oxford Center for Religion and Public Life.